اے ایم یوکے علما اور دانشوروں کی ویکسینیشن کے لیے اپیل

علی گڑھ:علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے علماء اور دانشوروں نے تمام برادران ملک سے اپیل کی ہے کہ وہ کرونا جیسی مہلک وبا سے خود کو محفوظ رکھنے کے لیے ویکسی نیشن ضرور کروائیں۔ یونیورسٹی کے 10 اساتذہ کی جانب سے جاری ایک اپیل میں کہا گیا ہے کہ آج پوری دنیا اور خاص طور پر ہمارا ملک جس سنگین وبا کا شکار ہوگیا ہے وہ سب کے سامنے ہے۔ کورونا کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور طوفان اس تیزی پر آگیا ہے کہ ہمارا تمام پبلک ہیلتھ، میڈیکل اور صحت کا نظام متاثر ہوگیا ہے۔ ڈاکٹر، طبی عملہ اور سبھی جنگی پیمانے پر اس بلا سے لڑ رہے ہیں اور مجاہدانہ شان سے اپنی جانیں تک دے رہے ہیں۔ ہم ان کو ہدیہ تہنیت پیش کرتے ہیں۔اپیل میں کہا گیا ہے کہ ان حالات میں ہر شہری اور تمام مذاہب کے ماننے والوں کا فرض ہے کہ وہ اپنی اور دوسروں کی جان بچانے کے لیے تمام ممکنہ تدبیریں اپنائیں اور حکومت اور ڈاکٹروں کی ہدایات پر عمل کریں۔ تمام مذاہب کے لحاظ سے جان کی حفاظت سب سے اہم ہے اور قرآن کریم میں بھی خود کو ہلاکت میں ڈالنے سے سختی سے منع کیا گیا ہے۔ بحیثیت مسلمان یہ ہمارا عقیدہ ہے کہ بیماری اور شفاء دونوں اللہ تعالی کے قبضہ قدرت میں ہے لیکن احتیاطی اقدامات نیز علاج ومعالجہ وہ ظاہری اسباب ہیں جن کو اللہ رب العزت نے شفایابی کے لیے ذریعہ بنایا ہے اور اس پر عمل کرنا دینی لحاظ سے لازمی ہے۔ اس لیے چہرے پر ماسک لگانا، سماجی دوری بنائے رکھنا اور ہاتھ دھوتے رہنا نہ صرف ڈاکٹروں اور حکومت کی ہدایت کے مطابق ہے بلکہ یہ ہر شخص کا مذہبی فریضہ بھی ہے۔اپیل میں کہا گیا ہے کہ ان احتیاطی تدابیر میں سب سے اہم ویکسینیشن ہے۔ ویکسین کے ذریعے ہی ہم اس عالمی وبا کے خلاف جیت حاصل کر سکتے ہیں۔اپیل میں درخواست کی گئی ہے کہ جلد سے جلد مقررہ اصولوں کے مطابق تمام لوگ ویکسین لگوائیں۔ اس میں کسی قسم کی ہچکچاہٹ اپنے گھر والوں اور ملک کے دیگر شہریوں کی جان کو خطرے میں ڈالنا ہے۔ اساتذہ نے کہا کہ ہماری تمام لوگوں سے اپیل ہے کہ محکمہ صحت کی ہدایت کے مطابق ویکسین لگوانے میں پہل کریں تاکہ خود بھی محفوظ رہیں اور ملک سے اس آفت کا خاتمہ ہو سکے جس سے شہریوں کی جان اور ملک کی ترقی خطرے میں پڑ سکتی ہے۔اپیل میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ہم سب کے لیے ضروری ہے کہ ویکسی نیشن کے ساتھ ساتھ صدق دلی کے ساتھ اللہ سے لو لگائیں اور اس وبا سے حفاظت کے لیے خصوصی دعائوں اور آن لائن یوم استغفار کا اہتمام کریں کیونکہ تمام حفاظتی تدابیر اختیار کرکے ھفاظت کے لیے ہم کو اللہ رب العزت ہی کی طرف رجوع کرنا چاہئے۔ اپیل پر جن اساتذہ نے اپنے دستخط کیے ہیں ان میں ڈین، فیکلٹی آف تھیالوجی پروفیسر محمد سعود عالم قاسمی، ڈائریکٹر، کے اے نظامی سنٹر فار قرآنک اسٹڈیز پروفیسر عبدالرحیم قدوائی، ڈائریکٹر، سرسید اکیڈمی، پروفیسر علی محمد نقوی، پرنسپل، ذاکر حسین کالج آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پروفیسر ایم ایم سفیان بیگ، سابق ڈین، فیکلٹی آف تھیالو جی پروفیسر توقیر عالم فلاحی، چیئرمین، ڈپارٹمنٹ آف سنی تھیالو جی پروفیسر محمد سلیم، سابق چیئرمین، ڈپارٹمنٹ آف اسلامک اسٹڈیز پروفیسر عبید اللہ فہد، چیئرمین، ڈپارٹمنٹ آف شیعہ تھیالوجی پروفیسر طیب رضا نقوی، سابق ناظم سنی دینیات، ڈاکٹر مفتی زاہد علی خان اور ڈائریکٹر، برج کورس اور سی ای پی ای سی اے ایم آئی مسٹر نسیم احمد خان شامل ہیں۔