امریکہ:ٹرمپ کے حامیوں اور مخالفین کا پرتشددمظاہرہ

نیویارک:امریکہ میں ہونے والے انتخابات کے بعد ٹرمپ کے حامی اپنی ممکنہ شکست پر سیخ پا ہیں اور جیسا اندیشہ ظاہر کیا جا رہا تھا، ویسا ہی نظارہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔مختلف امریکی ریاستوں میں ٹرمپ حامیوں اور مخالفین کے درمیان پرتشدد جھڑپیں شروع ہو رہی ہیں، جس کے نتیجے میں کئی افراد زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں، ہزاروں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے۔ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق گزشتہ شب سے واشنگٹن سمیت کئی امریکی ریاستوں میں ٹرمپ کے حامیوں ںے بڑی تعداد میں جمع ہوکر انتخابی نتائج کے خلاف احتجاج کیا جس میں چوری بند کرو اور ہر ووٹ گنتی کرو کے نعرے لگائے۔صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں اور مخالفین کے درمیان واشنگٹن میں تلخ تصادم ہوا، پولس حالات کو قابو میں کرنے کی کوشش کرتی رہی تاہم حالات مکمل طور پر قابو میں نہیں آرہے۔ امریکی میڈیا میں شائع ایک خبر کے مطابق گزشتہ شب شہر میں کئی مقامات پر پرتشدد تصادم کے واقعات پیش آئے۔ واشنگٹن پوسٹ نے کئی ویڈیو کا حوالہ بھی پیش کیا ہے جس میں ٹرمپ حامی اور مخالفین کے درمیان ہاتھا پائی اور تشدد کے مناظر واضھ دکھائی دے رہے ہیں۔ ویڈیو میں دونوں اطراف سے سامان اٹھا کر پھینکا جارہا ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق کئی مقامات پر مظاہرین اور پولس کے درمیان بھی جھڑپ ہوئی، حکام کے مطابق ان جھڑپوں میں دو پولیس اہلکار زخمی ہوچکے ہیں، اس دوران وہائٹ ہاؤس کے باہر کچھ مظاہرین کی جانب سے آتشزدگی بھی کی گئی جس کے بعد نقاب پوش سیکورٹی افسروں نے مشتعل افراد کو قابو کرکے پیچھے ہٹا دیا۔واضح رہے کہ امریکی انتخابات کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج سامنے آچکے ہیں جس کے بعد جو بائیڈن کو 306 الیکٹرول ووٹ حاصل ہوئے ہیں، جو کہ صدارت کے لیے واضح برتری ہے ،تاہم صدر ٹرمپ اول دن سے نتائج تسلیم کرنے سے انکار کررہے ہیں اور ان کی کمپین ٹیم کئی مقامات پر نتائج کے خلاف عدالتوں سے رجوع کرچکی ہے۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*