الہ آباد ہائی کورٹ کا یوگی حکومت کو حکم، ڈاکٹر کفیل کو فوراً رہا کیا جائے

لکھنؤ:الہ آباد ہائی کورٹ نے ڈاکٹر کفیل کو بڑی راحت دیتے ہوئے یوپی حکومت کو انھیں فوری طورپر رہا کرنے کا حکم دیا ہے۔ کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ ڈاکٹر کفیل کو جس مبینہ اشتعال انگیز بیان بازی کی وجہ سے قید کیا گیا اور ان کے خلاف این ایس اے لگایاگیا ،دراصل اس بیان میں اشتعال انگیزی کی کوئی بات ہی نہیں تھی۔ انھوں نے اپنی تقریر میں ایسی کوئی بات نہیں کی تھی،جس سے کسی طبقے کے خلاف نفرت بھڑکنے کا خدشہ ہو۔ کورٹ کا فیصلہ ڈاکٹر کفیل کی والدہ کی عرضی کی سماعت کے دوران آیا ہے،انھوں نے کورٹ میں درخواست دائر کرکے یہ کہا تھا کہ ان کے بیٹے کو غیر قانونی طورپر گرفتار کیاگیا ہے اور انھیں رہا کیا جائے۔
ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا کہ این ایس اے کے تحت ڈاکٹر کفیل کو گرفتار کرنا اور ان کی قید کی مدت میں توسیع کرنا غلط تھا۔ قابل ذکر ہے کہ ڈاکٹر کفیل گزشتہ چھ ماہ سے جیل میں بند ہیں،حال ہی میں ان کی حراست کو مزید تین ماہ کے لیے بڑھایا گیا تھا۔ انھوں نے پی ایم مودی کو خط لکھ کر رہاکرنے کی اپیل کی تھی اور کورونا متاثرین کے علاج کے لیے اپنی خدمات کی پیش کش کی تھی۔