آل انڈیاایسوسی ایشن آف عربک ٹیچرس اینڈ اسکالرس کے زیر اہتمام قومی سمینار کا انعقاد

نئ دہلی:عربی زبان ایک زندہ وپائندہ زبان ہے، اس میں ہر زمانے کے ساتھ چلنے کی صلاحیت موجود ہے، اس زبان کو سمجھنے اور بولنے والے دنیا کے بیشتر خطوں میں موجود ہیں۔اس کی ترویج واشاعت میں ہندوستان کا غیر معمولی کردار ہے۔ان خیالات کا اظہار مملکت قطر کے ہندوستان میں سفیر مسٹر محمد بن خاطر الخاطر نے کیا۔وہ آل انڈیا ایسوسی ایشن آف عربک ٹیچرس اینڈ اسکالرس(رجسٹرڈ) کے زیر اہتمام قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان حکومت ہند وشعبۂ عربی جامعہ ملیہ اسلامیہ ،نئی دہلی کے مالی تعاون واشتراک سے ’ہندوستان میں عربی زبان کی تدریس : امید وامکانات‘ کے موضوع پرمنعقدہ دوروزہ ورچول قومی سمینار کی افتتاحی تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کررہے تھے۔انھوں نے کہاکہ ہندوستان میں عربی زبان کی ترویج واشاعت میں عصری جامعات اور دینی مدارس قابل قدر خدمات پیش کررہے ہیں۔یہ انتہائی مسرت وشادمانی کی بات ہے۔ایسوسی ایشن کی یہ علمی تقریب اسی سلسلے کی ایک سنہری کڑی ہے۔قبل ازیں صدرشعبۂ عربی جامعہ ملیہ اسلامیہ پروفیسر عبدالماجد قاضی نے استقبالیہ کلمات میںبرطانوی ہندوستان میں عربی زبان وادب کی ترویج واشاعت کے سلسلے میں دینی مدارس کی خدمات پر مفصل روشنی ڈالی۔ایسوسی ایشن کے قومی صدر پروفیسر حبیب اللہ خان نے ایسوسی ایشن کی سرگرمیوں کا احاطہ کرتے ہوئے سمینار کے موضوع کا تعارف کرایا، انھوں نے سرکاری جامعات میں عربی زبان کی تدریس کا جائزہ بھی پیش کیا۔تقریب کی نظامت ایسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری پروفیسر رضوان الرحمن ،چیئر پرسن سینٹر آف عربک اینڈ افریقن اسٹڈیزجے این یونے کی۔صدارت علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی آرٹس فیکلٹی کے سابق ڈین پروفیسر سید کفیل احمد قاسمی نے کی ۔
بعدازاں پانچ اکیڈمک نشستوں میں ممبئی یونیورسٹی، بردوان یونیورسٹی، مغربی بنگال، جامعہ ملیہ اسلامیہ، جے این یو، دہلی یونیورسٹی،ذاکرحسین دہلی کالج کے اساتذہ واسکالرس نے مختلف موضوعات پر اٹھارہ مقالات پیش کیے۔پہلی اکیڈمک نشست کی صدارت انڈیاعرب کلچرل سینٹر کے ڈائرکٹرپروفیسر محمد ایوب ندوی نے کی ، دوسری نشست کی صدارت پروفیسر عبد الماجد قاضی صدر شعبہ جامعہ ملیہ اسلامیہ نے کی ، تیسری نشست کی صدارت پروفیسر رضوان الرحمن نے کی ، چوتھی نشست کی صدارت پروفیسر سید حسنین اختر دہلی یونیورسٹی نے کی، آخری اکیڈمک نشست کی صدارت ایسوسی ایشن کے صدر پروفیسر حبیب اللہ خان نے کی۔جب کہ اختتامی تقریب کی صدارت ایسوسی ایشن کے سابق صدر پروفیسر محمد نعمان خان شعبۂ عربی دہلی یونیورسٹی نے کی۔ایسوسی ایشن کے خازن ڈاکٹر مجیب اختر استاذ شعبۂ عربی ڈی یو نے سمینار کی رپورٹ پیش کی۔صدرایسوسی ایشن کے کلمات تشکر کے ساتھ بحسن وخوبی دوروزہ سمینار اختتام کو پہنچا۔