کانگریس کے ریاستی صدر اجے کمارللوکی ضمانت منظور

لکھنؤ:کانگریس کے ریاستی صدر اجے کمار للوکو الہ آباد ہائی کورٹ کی الہ آباد بنچ سے ضمانت مل گئی ہے۔ للوکوکو لکھنؤ پولیس نے 21 مئی کوآگرہ سے گرفتار کیا تھا۔ تب سے وہ جیل میں ہیں۔ وہ اب ضمانت ملنے کے بعد جیل سے باہر آسکیں گے۔ یہ الزام ہے کہ للونے فتح پور سیکری اور آگرہ میں وبا کے دوران دھرنا دیا۔ کانگریس کی ایک ہزار بسوں کی فہرست میں حکومت نے انہیں لینے سے انکار کردیا تھا۔ بس کی فہرست کے معاملے میں ،پرینکا گاندھی کے ذاتی سکریٹری سندیپ سنگھ پر حضرت گنج کوتوالی میں مقدمہ درج تھا۔بسوں کی فہرست کو لے کر یوپی حکومت اور کانگریس کے درمیان شدید لڑائی کے درمیان اجی کمارللو 20 مئی کوآگرہ میں مظاہرہ کررہے تھے۔ تب ہی انھیںوبائی ایکٹ کی خلاف ورزی کرنے پر گرفتار کیا گیا تھا۔ جہاں اگلے دن ضمانت ملنے کے بعد لکھنؤ پولیس نے انھیں تحویل میں لے لیا۔ ان کی ضمانت کی درخواست یکم جون کو ایم پی-ایم ایل اے خصوصی عدالت نے مسترد کردی تھی۔ اس کے بعد للونے ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی۔ یہ دلیل دی گئی تھی کہ بس کی فہرست کے تنازعہ میں للوکاکوئی کردار نہیں ہے۔انھیںسیاسی وجوہات کی بناء پرپھنسایا گیا ہے۔ جس پر کیس کی سماعت کی تاریخ 16 جون دی گئی تھی۔