افغانستان سے اپنے شہریوں کا انخلا اولین ترجیح، وزرا کی اپوزیشن لیڈروں کے ساتھ میٹنگ

 

نئی دہلی:حکومت نے جمعرات کو مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کوافغانستان کی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا اورکہاہے کہ ہندوستانی اہلکاروں کو ملک سے نکالنا اولین ترجیح ہے۔گزشتہ ہفتے طالبان کے افغانستان پر قبضے کے پس منظر میں وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کو اس ملک کی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا۔پارلیمنٹ ہاؤس انیکسی میں منعقدہ اس میٹنگ میں جے شنکر کے علاوہ راجیہ سبھا کے لیڈر اور مرکزی وزیر پیوش گوئل اور پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی بھی موجودتھے۔اجلاس میں شریک کچھ لوگوں کے مطابق وزیرخارجہ نے کہاہے کہ بھارت کوشش کر رہا ہے کہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو افغانستان سے باہر نکالا جائے۔ انہوں نے اصرارکیاہے کہ بھارتی اہلکاروں کا انخلا ایک اولین ترجیح ہے۔حکومت نے افغانستان کی صورتحال کوسنگین قرار دیا اورکہاہے کہ طالبان نے دوحہ معاہدے میں کیے گئے وعدوں کو توڑا ہے۔نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے رہنما شرد پوار ، راجیہ سبھا میں قائد حزب اختلاف ملکاارجن کھڑگے ، لوک سبھا میں کانگریس کے رہنما ادھیر رنجن چودھری ، ڈی ایم کے لیڈر ٹی آر بالو ، سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوگوڑا ، اپنا دل کی رہنما انوپریہ پٹیل اور کچھ دیگر نے اس اہم میٹنگ میں شرکت کی۔