آدتیہ ٹھاکرے نے یو جی سی کے ایس سی فیصلے کو چیلنج کیا

ممبئی:مہاراشٹرکی کابینہ کے وزیرآدتیہ ٹھاکرے نے ہفتے کے روزکالجوں اوریونیورسٹیوں میں فائنل امتحانات منعقدکرنے کے مرکزی حکومت کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیاہے۔ اس سال کے شروع میں کورونا وائرس کے پھیلنے کی وجہ سے امتحانات ملتوی کردیئے گئے تھے۔ یہ درخواست یوواسینانے دائرکی ہے ، جو شیوسینا کی یوتھ ونگ ہے اور اس کی سربراہی آدتیہ ٹھاکرے کررہے ہیں۔یواسینا نے اپنے بیان میں کہاہے کہ مرکزی حکومت پورے ملک میں طلباء کے امتحانات کی اجازت دے کر ان کے تحفظ ، خوف ، ذہنی اور جسمانی صحت کو نظرانداز کررہی ہے۔سینانے کہاہے کہ یہ دیکھتے ہوئے کہ کوروناقومی آفت ہے ، یو جی سی کو آخری سال کے امتحانات ملتوی کرناچاہیے۔ تاہم ایسا لگتا ہے کہ یو جی سی یہ سمجھنے کے قابل نہیں ہے کہ ملک کس تباہی سے گزر رہاہے۔یواسینا کاکہناتھاکہ طلباء اورامتحان کے نگران آکر امتحانی مرکزجائیں گے اور اس سے کورونا انفیکشن کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔آئی آئی تی جیسے ملک بھر کے بڑے تعلیمی اداروں نے آخری سال کے امتحانات پہلے ہی منسوخ کردیئے ہیں۔ تنظیم کا کہنا تھا کہ اس تعلیمی سال میں اب تک حاصل کردہ نمبروں کی بنیاد پر طلباء کی ترقی کی جائے۔