ایکٹر کمل ہاسن کا مودی سے سوال:نصف ہندوستان فاقہ کشی کا شکار،ایسے میں نیا پارلیمنٹ ہاؤس بنانے کی کیاضرورت ؟

چنئی:2021 میں ہونے والے تامل ناڈو اسمبلی انتخابات کے لئے اپنی پارٹی ایم این ایم کے لیے انتخابی مہم شروع کرنے سے قبل کمل ہاسن نے وزیر اعظم نریندر مودی پر حملہ کیا ہے۔ ہاسن نے نئے پارلیمنٹ ہاؤس کے سنگ بنیاد کے لئے وزیر اعظم کو نشانہ بنایا۔ انہوں نے سوال کیا کہ جب ملک مشکلات سے گذر رہا ہے تو ایسے وقت میں اتنی بڑے خرچے کی کیا ضرورت تھی۔ معروف اداکار اور مکل ندھی میم (ایم این ایم) کے بانی نے اتوار کے روز پوچھا کہ ایسے وقت میں جب ملک نشیب وفراز کا سامنا کررہا ہے تو اتنے بڑے تعمیری پروجیکٹ کا کیا مطلب ہے۔انہوں نے کہا کہ جب ملک کی نصف آبادی کورونا وائرس کی وجہ سے بھوک مری کی شکار ہے، لوگ معاشی مسائل سے پریشان ہو رہے ہیں،ایسے وقت میں 1000 کروڑ روپے کی نئی پارلیمنٹ کیوں؟ جب چین کی عظیم دیوار تعمیر ہوئی تو ہزاروں افراد کی موت ہوئی تھی اس وقت حکمرانوں نے کہا کہ یہ عوام کے تحفظ کے لئے ہے۔ کس کی حفاظت کے لئے آپ ایک ہزار کروڑ روپے کی پارلیمنٹ بنا رہے ہیں؟ واضح رہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے 10 دسمبر کو نئے پارلیمنٹ ہاؤس کا سنگ بنیاد رکھا تھا۔ پارلیمنٹ کی یہ نئی عمارت 20000 کروڑ روپئے کے سنٹرل وسٹا منصوبے کا ایک اہم حصہ ہے، جس میں راشٹرپتی بھون سے انڈیا گیٹ تک 13.4 کلومیٹر لمبے راج پتھ پر سرکاری عمارتوں کی تعمیر نو یا تزئین و آرائش کی جائے گی۔