عام آدمی پارٹی نے ایم سی ڈی پر 2400کروڑکی بدعنوانی کاالزام لگایا

 

نئی دہلی :دہلی حکومت اور میونسپل کارپوریشنوں کے مابین الزامات کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ عام آدمی پارٹی (آپ) نے ایم سی ڈی پر 2400 کروڑ روپئے کی دھاندلی کا الزام عائد کیا ہے۔ ان الزامات پر دہلی اسمبلی کا ایک روزہ خصوصی اجلاس طلب کیاگیاہے۔ اس خصوصی سیشن کا انعقاد 17 دسمبر کو ہوگا۔ عام آدمی پارٹی (آپ) کے ممبر اسمبلی سوربھ بھاردواج نے کہاہے کہ ایم سی ڈی کی ناکامیوں کو چھپانے کے لیے تینوں میئر تاج ہوٹل کا شاہی پنیر کھا کر وقت گزار رہے ہیں ، دہلی والوں کو کوئی اعتراض نہیں ہے۔ آپ کے ممبر اسمبلی سوربھ بھاردواج نے الزام لگایا کہ بی جے پی کارکنان اب صفائی ملازمین کو دھمکیاں دے رہے ہیں کہ وہ میئروں کے ساتھ سی ایم رہائش گاہ پر دھرنے پر بیٹھیں ورنہ وہ تنخواہ نہیں دیں گے۔ ہائی کورٹ نے حکم دیا ہے کہ وہ صفائی عملے کوہر ماہ کی 10 تاریخ تک تنخواہ دے اور اگلے دن ہائی کورٹ کو آگاہ کرے۔آپ کے ممبر اسمبلی سوربھ بھاردواج نے کہاہے کہ اس کے باوجود وہ گھناؤنی سیاست کررہے ہیں اور ملازمین کو تنخواہ نہیں دے رہے ہیں۔ اکتوبر سے نومبر کی تنخواہ نہیں دی گئی ، اب تیسرے مہینے کی تنخواہ بھی بقایا ہے۔ ڈیڑھ سال پہلے گاندھی میدان کی اراضی فروخت ہوئی ، کروڑوں روپے اس سے آئے ، محکمہ انکم ٹیکس سے کرایہ لینا پڑا ، نہیں لیا اور اب انہوں نے 2500 کروڑ کا گھوٹالہ کیا ہے۔آپ کے ممبر اسمبلی سوربھ بھاردواج نے کہا کہ جب ڈھائی ہزار کروڑ کے اس گھوٹالے پر ہورڈنگز پرسوال اٹھائے گئے تھے تو وہ اسے ہٹا رہے ہیں۔ وہ دکانداروں کو نوٹس دے رہے ہیں۔ ایم سی ڈی کے عملہ وزیر پور ، کالکاجی ، گریٹر کیلاش میں ہورڈنگز اتار رہے ہیں۔