آدھار کارڈ سے منسلک نہ ہونے کی وجہ سے 3 کروڑ راشن کارڈ منسوخ

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے آدھار کارڈ سے لنک ہونے کی وجہ سے تقریباََتین کروڑ راشن کارڈز کی منسوخی کو ایک ’انتہائی سنجیدہ‘ معاملہ قراردیا ہے اور اس معاملے پر مرکزی حکومت اور تمام ریاستوں سے جواب طلب کرلیاہے۔ چیف جسٹس (سی جے آئی)ایس اے بوبڑے اور جسٹس اے سی بوپنانہ اور جسٹس وی رامسوبرمیان کی بنچ نے بدھ کے روزکہاہے کہ اس کوبطورکیس نہیں دیکھنا چاہیے کیونکہ یہ ایک انتہائی سنجیدہ معاملہ ہے۔ سپریم کورٹ کی بینچ نے کہاہے کہ اس کیس پرحتمی سماعت ہوگی۔سماعت کے آغاز پر ، سینئر ایڈووکیٹ کولن گونزالیوس ، جس نے درخواست گزار کویلی دیوی کی طرف سے پیشی کی ، کہاہے کہ عرضی میں ایک بڑا کیس اٹھتا ہے۔ چیف جسٹس نے کہا ہے کہ ممبئی ہائی کورٹ میں بھی میرے ساتھ بھی ایسا ہی ایک معاملہ آیا تھا۔ مجھے لگتا ہے کہ یہ معاملہ متعلقہ ہائی کورٹ میں دائر ہونا چاہیے تھا۔’اس کے ساتھ ، بنچ نے وکیل کو بتایاہے کہ انہوں نے اس کیس کی توسیع کردی ہے۔