24 گھنٹے میں دہلی میں 1106 کورونا کے مریض

نائب وزیر اعلی نے بتایااموات کی تعداد میں اضافے کی وجہ
نئی دہلی:گزشتہ دو دنوں میں ملک کی دارالحکومت دہلی میں کورونا وائرس کے معاملات میں ایک بڑی تعداد درج کی گئی ہے۔ دہلی میں لگاتار دوسرے دن بھی کورونا کے 1000 سے زائد نئے معاملے رپورٹ ہوئے۔ گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 1106 نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں اور ملک کی دارالحکومت میں کورونا کے معاملوں کی تعداد 17 ہزار (17386) کو عبور کرچکی ہے۔ دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسوڈیا اور وزیر صحت ستیندر جین نے ملک کی دارالحکومت میں کورونا کے مریضوں کی تعداد کی وجہ سے بڑھتے ہوئے خوف کے درمیان ایک پریس کانفرنس کی۔ اس موقع پر سسودیا نے کہا کہ کورونا وائرس کے بارے میں فکر کرنے کے بجائے محتاط رہ کر ضروری احتیاط برتنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے اس موقع پر نہ گھبرانے کا مشورہ بھی دیا۔جمعرات کو کورونا کی وجہ سے 13 اموات ہوئیں۔ 69 اموات کے معاملات پرانے تھے، جن میں 82 اموات ریکارڈ میں آچکی ہیں۔ گزشتہ34 دنوں میں 69 اموات ہوئیں جن میں 52 صفدرجنگ سے تھیں۔دہلی میں کورونا کی وجہ سے مجموعی طور پر 398 اموات ہوئیں۔ ہلاکتوں کے معاملات کی دیر سے اطلاع دینا بھی بڑھتی ہوئی تعداد کی ایک وجہ ہے۔ سسودیا نے اعتراف کیا کہ کورونا مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے، لیکن 50فیصد مریض بھی ٹھیک ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 80-90فیصد لوگ ہوم کووارنٹین سے صحت یاب ہو رہے ہیں، انہوں نے لوگوں کو کورونا کی وجہ سے نہ گھبرانے کا مشورہ دیا اور کہا کہ ہلکی علامات میں ڈاکٹر سے ملنے کی ضرورت نہیں ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ صفدرجنگ اسپتال میں 52 اموات کی اطلاعات ہیں، ان اموات کی تعداد کو آج کے ہیلتھ بلیٹن میں شامل کیا گیا ہے۔وزیر صحت ستیندر جین نے کہا کہ دہلی میں 17386 معاملات ہیں جن میں سے 1106 نئے کیس ہیں۔ اس کے ساتھ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ24 گھنٹوں کے دوران 351 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔ اب تک مجموعی طور پر 7846 افراد ٹھیک ہوچکے ہیں۔ طبی سہولیات کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس 5000 بیڈز ہیں، اس میں 3700 سرکاری بیڈز ہیں، 1300 پرائیویٹ اسپتال ہیں۔