10 لاکھ کی آبادی والا این سی آر کا کھوڑا گاؤں سیل

نئی دہلی:دہلی این سی آر میں غازی آباد کی کھوڑا علاقے میں کورونا وائرس کا خطرہ ویسی ہی منڈلا رہا ہے جیسے ممبئی میں دھاراوی علاقہ ہے۔دہلی این سی آر میں کھوڑا گاؤں ایک ایسا علاقہ ہے جس کی سرحد دہلی غازی آباد اور نوئیڈا اضلاع سے متصل ہیں۔یہاں پر لاکھوں کی تعداد میں مہاجر مزدور رہتے ہیں اور گھنی آبادی بھی ہے۔اس بات کا اندازہ اس بات سے لگا سکتے ہیں کہ علاقے میں 42 ہزار مکان ہیں جن میں 10 لاکھ لوگ رہتے ہیں۔14 مریض سامنے آ چکے ہیں جس میں ایک کی موت ہو چکی ہے۔ اس پورے علاقے کو سیل کیا جا چکا ہے۔شمالی ہندوستان کے سب سے بڑے ہاٹ سپاٹ بنے غازی آباد کے کھوڑا گاؤں کے لئے تعینات آدتیہ پرجاپتی نے کہا کہ کھوڑا کافی گھنی آبادی والا علاقہ ہے۔یہاں کے مزدوروں کی آبادی ہے جو دہلی اور نوئیڈا جاتے ہیں۔مزدور ہیں، ریہڑی پٹری والے، اخبار فروخت کرنے والے اور اسپتالوں کا اسٹاف جیسے وارڈبوائے، نرس وغیرہ ہیں۔آدتیہ پرجا پتی نے بتایا کہ کہ جن لوگوں کا دہلی یا نوئیڈا آنا جانا ہوا ہے وہی لوگ کورونا وائر س سے متاثر ہوئے یا ان کے رابطے میں آئے لوگ کورونا وائر س سے متاثر ہوئے ہیں۔اب ہماری کوشش ہے کہ یہاں سے لوگوں کا آنا جانا دہلی یا نوئیڈا کے لئے بند کر دیا جائے۔یہاں پر آئے ان میں بہت سے کیس ایسے تھے جن کا دہلی یا نوئیڈا ک اسپتالوں سے رابطہ تھا یا علاج کرانے گئے تھے۔یہ سب سے بڑی وجہ ہے۔انہوں نے بتایا کہ کل 10 لاکھ کی آبادی سیل کی گئی ہے۔کھوڑا کے مکن پور میونسپلٹی کونسل کے ایگزیکٹیو آفیسر کے کے بھڑانا نے بتایا کہ کھوڑا میں تقریباً42000 مکان ہیں وہ لوگ جو ضرورت کا سامان یا راشن کا سامان خرید سکتے ہیں ان کے لئے اندر ہی اہتمام کیا گیا ہے اور جو نہیں خرید سکتے ان کوپکا ہوا کھانا پیک کرکے سپلائی کیا جائے گا۔