Home بین الاقوامی خبریں کٹھواقصورواروں کوسخت سزا دی جائے:اقوام متحدہ کی اپیل

کٹھواقصورواروں کوسخت سزا دی جائے:اقوام متحدہ کی اپیل

by قندیل

نیویارک :14اپریل ( قندیل نیوز)
کٹھوا میں آٹھ سالہ معصوم آصفہ کی عصمت دری اور اس کے بعد وحشیانہ قتل کی باز گشت اب اقوام متحدہ تک پہنچ چکی ہے ۔اقوام متحدہ نے اس معاملہ کے تحت اپنا رخ صاف کردیا ہے۔ واضح ہو کہ جنر ل سیکریٹری انتونیوگترس معصوم آصفہ کی عصمت دری اور اس کے وحشیانہ قتل کے معاملے کو’خوفناک اور سنگین‘ قرار دیتے ہوئے، اس گھناؤنے جرم کو انجام دینے والے ملزمان کو قانون کے دائرے میں لائے جانے کی اپیل کی ہے ۔ خانہ بدوش گوجر بکر وال مسلم خاندان کی ایک بچی آصفہ 10 جنوری کو اپنے گھر کے قریب سے لاپتہ ہو گئی تھی اور ایک ہفتے کے بعد اس کی لاش اسی علاقہ میں ملی تھی۔ گاؤں کے ہی ایک مندر میں ایک ہفتہ تک اس کے ساتھ مبینہ طور پر چھ درندہ صفت لوگوں نے عصمت دری کی۔ متاثرہ کو قتل کرنے سے پہلے نشہ آور اشیاء دے کر اس کے ساتھ کئی بار عصمت دری کی گئی تھی۔ واضح ہو کہ اس شرمناک واقعہ پر پورے بھارت میں بلاتفریق اشتعال ہے اور کئی سماجی تنظیموں کی طرف سے مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچانے کے لیے مظاہرے کیے جارہے ہیں۔ گترس کے ترجمان اسٹیفن دجاریک نے کہاکہ میں نے بچی کے ساتھ عصمت دری کے یہ بھیانک جرم کی میڈیا رپورٹ دیکھی ہے۔ ہمیں امید ہے کہ حکام مجرموں کو قانون کے دائرے میں لائیں گے تاکہ بچی کی عصمت دری اور اس کے وحشیانہ قتل کے معاملہ میں مجرموں کو سزا دی جائے ۔بچی کے ساتھ عصمت دری اور اس کے قتل کے معاملہ پر سیکرٹری جنرل کے تاثرات پوچھے جانے پر دجاریک نے یہ بیان دیا ہے ۔ واضح ہو کہ ا س معاملہ میں کرائم برانچ کے ایک خصوصی تفتیشی ٹیم کی تشکیل دی گئی ہے ۔ ابھی تک دو پولیس افسران سمیت آٹھ افراد کی گرفتاری کی گئی ہے ۔ نریندر مودی نے اس معاملہ پر اپنی ناراضگی ظاہر کرنے ہوئے اسے ملک کے لئے ’شرمناک‘ قرار دیا اور مجرموں کو نہ بخشے جانے کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہاتھاکہ میں ملک کو یہ یقین دہانی کرانا چاہتا ہوں کہ کوئی مجرم بخشا نہیں جائے گا، انصاف ہوگااور ہماری بیٹیوں کو انصاف ملے گا۔

You may also like

Leave a Comment