نتن یاہونے ہندوستان کی پاکستان پالیسی کی حمایت کی

ممبئی:19؍جنوری(قندیل نیوز)
اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نتن یاہو 6روزہ دورہ ہند کے بعد واپس آ گئے ہیں۔نئی دہلی سے نتن یاہو کا دورہ شروع ہواتھا جوآگرہ اوراحمد آباد کے بعدممبئی میں ختم ہوا۔ایک انٹرویو میں نتین یاہو نے ہندوستان کی پاکستان پالیسی کی حمایت کی ہے۔انہوں نے ہندوستان کے سرجیکل اسٹرائیک پر بھی اتفاق کیا ۔نتن یاہو نے انگریزی نیوز چینلز ٹائمس ناؤ کے حوالے سے ایک انٹرویو میں کہا کہ وزیراعظم پی ایم مودی ایک عظیم محب وطن ہیں جو ملک کے لئے اچھا ہوتاہے وہی کرتے ہیں۔جب سرحدپر دہشت گردوں کے بارے میں بھارت کی کارروائی کے بارے میں پوچھاگیا تو انہوں نے کہا کہ ہمارے درمیان کچھ ہم آہنگی ہے، مجھے نہیں لگتا کہ کچھ اس سے بھی آگے کہنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ اسرائیل پاکستان کا دشمن نہیں ہے اور نہ ہی انہیں ہمارا دشمن ہوناچاہئے۔ واضح ہو کہ جمعرات کونتن یاہو ممبئی میں تھے،وہاں انہوں نے بہت سے صنعتی ماہرین سے ملاقات کی،شام کے آخر میں بالی ووڈ کے اداکاروں کے ساتھ رات کا کھانا کھایا تھا۔اس دوران بہت سے ستارے موجود تھے جن میں امتابھ بچن، کرن جوہر، سبھاش گئی، ایشوریا بچن وغیرہم شامل تھے۔اس پروگرام کا مقصد اسرائیل میں فلم سازوں کے لئے کاروباری امکانات تلاش کرناتھا۔