میڈیاکوتواپنی پارٹی بنالی، راجیہ سبھاٹی وی کوبی جے پی کانہ بنائیے:غلام نبی آزاد

نئی دہلی، 07 فروری(قندیل نیوز)
اپوزیشن نے راجیہ سبھا میں آج راجیہ سبھا ٹی وی پرامتیازکاالزام لگایا۔ اپوزیشن نے کہا کہ پارلیمنٹ کی کاروائی میں حزب اختلاف کے رہنماؤں کو راجیہ سبھا ٹی وی پر نہیں دکھایا جا رہا ہے۔ کانگریس کے رہنما غلام نبی آزادی نے کہا کہ راجیہ سبھا ٹی وی کو بی جے پی کے ٹی وی میں تبدیل نہ کیا جائے،اسے راجیہ سبھاکاہی رہنے دیں۔ہاؤس میں ٹی ایم سی ایم پی ڈیریک اوبرین نے راجیہ سبھا ٹی وی کے لائیو ٹیلی کاسٹ پر سوال کیا اور کہا کہ انہوں نے 6 منٹ تک بات چیت کی، جسے راجیہ سبھا سبھا ٹی وی نے نہیں دکھایا۔ کانگریس کے رہنما غلام نبی آزاد نے بھی ڈیرک کے الزام کی حمایت کی۔انہوں نے کہا کہ پیر کے روز ہاؤس کی کارروائی راجیہ سبھاٹی وی نے بی جے پی کے صدر امت شاہ پر مرکوزرکھی تھی۔ غلام نبی آزاد نے الزام لگایا ہے کہ راجیہ سبھا ٹی وی نے راجیہ سبھا کی کارروائی میں 98 فیصد حکمراں بی جے کوہی دکھایا اوراس میں بھی بی جے پی صدر امیت شاہ کوزیادہ وقت دیاگیا۔ غلام نبی نے کہا کہ انہیں صرف 8 سیکنڈہی دکھایا گیا ،وہیں دیگر اپوزیشن رہنماؤں کوبھی صرف 8 سیکنڈ دکھایاگیا۔ اس طرح حزب اختلاف نے صرف 16 سیکنڈ حاصل کئے۔ انہوں نے اپنے غصے کا اظہار کیا اور کہا کہ یہ راجیہ سبھا ٹی وی میں نہیں ہونا چاہئے۔راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما آزاد نے چیئرمین سے مطالبہ کیا کہ تمام جماعتوں کو راجیہ سبھاٹی وی پرجگہ دی جانی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بی جے پی کا نہیں بلکہ راجیہ سبھا کا ٹیلی ویزن ہے۔ بی جے پی پرالزام لگاتے ہوئے آزاد نے کہا کہ آپ نے میڈیا کو اپنی پارٹی بنالی ہے لیکن راجیہ سبھا ٹی وی کو نہیں بنائیے۔ غلام نبی نے کہا کہ تمام پارٹی کی قیادت میں اس کی جانچ ہونی چاہیے۔